17

پشاور(حبیب صافی)اسپیشل مجسٹریٹ ریلوے مس وزیر کی ڈبگری گارڈن میں ریلوے کے دوکانوں کے خلاف کارروائی

(پشاور)ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ ریلوے ناصر خلیلی کی ہدایت پر اسپیشل مجسٹریٹ ریلوے مس وزیر نے پشاور میں واقع ڈبگری گارڈن میں واقع ریلوے کے دوکانوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے بقایاجات کی مد میں 42 دوکانوں کو سیل کردیا جس میں غنی ٹائرز،رضوان ٹائرز،داود ٹائرز،احتشام اینڈ برادرز ٹائرز،شالیمار ٹائرز،ایشیاء ٹائرز،نیو چارسدہ ٹائرز،اقبال کار ائیر کنڈیشن،ابراہیم ٹائرز ڈیلر،شاہ جہان ٹائرز ڈیلر،ھشتنگر ٹائرز،لندن ٹائرز ڈیلر،یونیورسل ٹائرز،اباسین ٹائرز وغیرہ وغیرہ شامل ہیں۔ریلوے کے بقایاجات کی مد میں 126 دوکانوں کے مالکان کو نوٹسز جاری کئے گئے تھے جس میں مہلت دیا گیا تھا جس میں 88 دوکانوں کے مالکان نے بقایاجات جو کہ ایک کروڑ بارہ لاکھ روپے تھے مقررہ مدت میں جمع کردیئے ہے جبکہ بقیہ 42 دوکانداروں کے زمہ ریلوے کے بقایاجات کی مد میں نوے لاکھ تھریاسی ہزار روپے بقایاجات ہے جو کہ واجب الادا ہے جس میں مالکان کو مہلت دیا گیا تھا اسکے باوجود دوکانداروں نے بقایاجات مقررہ مدت میں جمع نہیں کئے جس پر کارروائی کرتے ہوئے 42 دوکانوں کو سربمہر (سیل) کردیا جو کہ عدم ادائیگی بقایاجات تک سیل رہے گی۔
پشاور ڈویژن ریلوے انتظامیہ کے مطابق ریلوے کے بقایاجات کی مد میں نادہندگان کے خلاف اسپیشل مجسٹریٹ ریلوے مس وزیر کی نگرانی میں کارروائی جاری رہے گی جس میں کسی کے ساتھ کوئی نرمی نہیں برتی جائیگی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں